Showing 1-20 of 44 items.

ایک سوال کرنے والے نے اس عذاب کا سوال کیا جو واضح ہونے واﻻ ہے

کافروں پر، جسے کوئی ہٹانے واﻻ نہیں

اس اللہ کی طرف سے جو سیڑھیوں واﻻ ہے

جس کی طرف فرشتے اور روح چڑھتے ہیں ایک دن میں جس کی مقدار پچاس ہزار سال کی ہے

پس تو اچھی طرح صبر کر

بیشک یہ اس (عذاب) کو دور سمجھ رہے ہیں

اور ہم اسے قریب ہی دیکھتے ہیں

جس دن آسمان مثل تیل کی تلچھٹ کے ہو جائے گا

اور پہاڑ مثل رنگین اون کے ہو جائیں گے

اور کوئی دوست کسی دوست کو نہ پوچھے گا

(حاﻻنکہ) ایک دوسرے کو دکھا دیئے جائیں گے، گناهگار اس دن کے عذاب کے بدلے فدیے میں اپنے بیٹوں کو

اپنی بیوی کو اور اپنے بھائی کو

اور اپنے کنبے کو جو اسے پناه دیتا تھا

اور روئے زمین کے سب لوگوں کو دینا چاہے گا تاکہ یہ اسے نجات دﻻ دے

(مگر) ہرگز یہ نہ ہوگا، یقیناً وه شعلہ والی (آگ) ہے

جو منھ اور سر کی کھال کھینچ ﻻنے والی ہے

وه ہر اس شخص کو پکارے گی جو پیچھے ہٹتا اور منھ موڑتا ہے

اور جمع کرکے سنبھال رکھتا ہے

بیشک انسان بڑے کچے دل واﻻ بنایا گیا ہے

جب اسے مصیبت پہنچتی ہے تو ہڑبڑا اٹھتا ہے